سورۃ السجدہ ۔ سر جھکانا  32

0
54

سورۃ السجدہ ۔ سر جھکانا  32

سورۃ : 32 کل آیتیں : 30

اس سورت میں آیت نمبر 15 سے 17 تک اللہ کے لئے سجدہ کرنے والوں اور ان کو ملنے والے انعامات کے بارے میں ذکر آنے کی وجہ سے اس سورت کو یہ نام رکھا گیا ہے۔ 

بہت ہی مہربان، نہایت ہی رحم والے اللہ کے نام سے …

1۔ الف ، لام ، میم2۔ 

2۔ (یہ) تمام جہانوں کے پروردگار کی طرف سے نازل ہوئی کتاب ہے۔ اس میں کوئی شک نہیں۔

3۔ کیا وہ کہتے ہیں کہ اس کو اس نے گھڑ لیا ہے؟ ایسا نہیں ہے۔ (اے محمد!) تم سے پہلے جس قوم کو آگاہ کرنے والے نہ آیے تھے اس قوم کو خبردار کرنے اوروہ سیدھی راہ پانے(یہ)تمہارے رب کی طرف سے تم پر آئی ہوئی سچائی ہے۔

4۔ آسمانوں507 اور زمین کو اور ان کے درمیانی چیزوں کو اللہ ہی نے چھ دنوں میں پیدا کیا179۔ پھر عرش پر488 بیٹھا511۔ تمہارے لئے اس کے سوا کوئی سرپرست اور سفارشی17 نہیں ہے۔ کیا تم غور کروگے نہیں؟ 

5۔ آسمان507 سے زمین تک ہر معاملے کو وہی اہتمام کر تا ہے۔ وہ ایک دن میں اس کے پاس اوپر چڑھ جا ئے گا۔ وہ تمہارے حساب سے ایک ہزار سال کے برابر ہے293۔ 

6۔ وہ پوشیدہ اور ظاہر کا جاننے والا ہے۔ زبردست، نہایت ہی رحم والا ہے۔ 

7۔ وہ ہر چیز کی تخلیق کو آراستہ کیا۔ انسان کی پیدائش368 مٹی سے 503شروع کی506۔ 

8۔ پھر اس کی نسل کو حقیر پانی506 کے جوہر سے تراشا۔ 

9۔ پھر اس کو درست کر کے اپنی روح اس میں پھونکا۔ اور تمہارے لئے کان، آنکھیں اور دل بنائے۔ تم بہت کم ہی شکر ادا کر تے ہو۔ 

10۔ وہ لوگ پوچھتے ہیں کہ ہم زمین میں گم ہوجانے کے بعد کیا ہم نئی تخلیق حاصل کریں گے؟ درحقیقت وہ اپنے رب کی ملاقات488 کے منکر ہیں۔ 

11۔کہہ دو کہ تمہارے لئے مقرر کردہ موت کا فرشتہ تمہیں قبض کر لے گا165۔ پھر تم اپنے پروردگار کے پاس واپس لائے جاؤگے۔

12۔کاش کہ تم دیکھتے کہ جب مجرم لوگ اپنے رب کے سامنے سر جھکائے کہتے ہوں گے کہ اے میرے پروردگار!ہم نے دیکھ لیا، سن لیا، پس تو ہمیں واپس بھیج دے۔ ہم نیک عمل کریں گے اور ہم پختہ یقین رکھیں گے۔ 

13۔ اگر ہم چاہتے تو ہر ایک کو ان ان کی ہدایت دے دیتے۔ بلکہ ہماری طرف سے یہ بات سبقت لے چکی ہے کہ تمام (برے) انسانوں اور جنوں سے جہنم بھر دوں گا۔ 

14۔ (کہا جائے گا کہ) اس دن1 کی ملاقات کوتم بھول جانے کی وجہ سے مزہ چکھو۔ ہم بھی تمہیں بھول گئے6۔ پس تم جو کچھ کر رہے تھے اس کی وجہ سے ہمیشگی کا عذاب چکھو۔ 

15۔ ہماری آیتوں کے ذریعے جب نصیحت کی جائے تو سجدہ 396میں گر نے والے، اپنے رب کی تعریف کے ساتھ تسبیح کر نے والے اور فخر نہ کر نے والے ہی اس پر ایمان لانے والے ہیں۔

16۔خوف اور امید سے اپنے رب کو پکارنے کے لئے ان کے پہلو بستر وں سے الگ ہو جائیں گے۔ ہمارئی دی ہوئی چیزوں سے (نیک راہ میں) خرچ کر تے ہیں۔ 

17۔ ان کے اعمال کے صلہ میں ان کے لئے آنکھوں کی ٹھنڈک جو چھپا کر رکھی گئی ہے وہ کوئی نہیں جانتا۔ 

18۔ کیا ایک مومن جرم کر نے والے کی طرح ہوسکتا ہے؟ وہ برابر نہیں ہو سکتے۔

19۔ جو لوگ ایمان لائے اور نیک عمل کئے، ان کے (نیک ) عمل کی وجہ سے ان کا انعام جنت کے باغات کا ٹھکانا ہے۔

20۔جرم کرنے والوں کا ٹھکانا جہنم ہوگا۔ اس سے وہ جب بھی باہر نکلنا چاہیں گے تو انہیں اس میں پھر سے ڈالا جا ئے گا۔ اور ان سے کہا جائے گا کہ جس کو تم نے جھوٹ سمجھا تھا اس دوزخ کے عذاب کامزہ چکھو۔ 

21۔ وہ لوگ سدھر نے کے لئے اس بڑے عذاب سے پہلے انہیں (اس دنیا کی) چھوٹے عذاب کا انہیں مزہ چکھاتے ہیں۔ 

22۔ اس کے رب کی آیتوں کے ذریعے نصیحت کی جائے تو اس کو جھٹلانے والے سے بڑھ کر ظالم اور کون ہو گا؟ہم مجرموں کو سزا دیں گے۔

23۔ موسیٰ کو ہم نے کتاب عطا کی۔ (اے محمد!) ان کی ملاقات267 میں تم شک نہ کرو315۔ ان کو ہم نے بنی اسرائیل کے لئے رہنما بنایا۔

24۔ انہوں نے جب صبر کیا اور ہماری آیتوں کو یقین کے ساتھ تھام لیا تو ہم نے ہمارے حکم کے مطابق راہ دکھانے والے پیشواؤں کو ان میں سے جاری کیا۔ 

25۔ جن باتوں میں وہ اختلاف کر رہے تھے قیامت کے دن1 تمہارا رب ان کے درمیان فیصلہ کر دے گا۔ 

26۔ کیا انہیں اس بات نے سیدھی راہ نہیں دکھائی کہ ان سے پہلے ہم نے کئی نسلوں کو ہلاک کر چکے ہیں؟ان کے رہائشی مقامات سے یہ گزر رہے ہیں۔ اس میں کئی نشانیاں ہیں۔ کیا وہ لوگ سنتے نہیں؟ 

27۔ کیا انہوں نے نہیں دیکھا کہ ہم ہی خشک زمین کی طرف پانی بہا لے جا تے ہیں؟اس کے ذریعے ہم کھیتوں کو ظاہر کرتے ہیں۔اس کے ذریعے وہ اور ان کے مویشی کھا تے ہیں۔ کیا وہ غور نہیں کرتے؟ 

28۔ وہ کہتے ہیں کہ اگر تم سچے ہو تو وہ فیصلہ کب ہوگا؟ 

29۔اور کہو کہ فیصلہ کے دن1 (اللہ کا) انکار کر نے والوں کو ان کا ایمان لاناکچھ فائدہ نہ دے گا۔ اور وہ مہلت نہیں دئے جائیں گے۔ 

30۔ انہیں جھٹلا دو۔ اور منتظر رہو ،وہ بھی انتظار کر رہے ہیں۔ 

பகிர்

பதிலளி

உங்கள் கருத்துகளை பதிவிடுங்கள்
உங்கள் பெயர்